اُردو میں نعت گوئی تذکرہ نگار … ڈاکٹر ریاض مجید

اُردو میں نعت گوئی
تذکرہ نگار … ڈاکٹر ریاض مجید

پاکستان میں اُردو نعت میں پی ایچ ڈی کرنے والے پہلے خوش قسمت انسان ڈاکٹر ریاض مجید کا نام دنیائے نعت میں سنہری حرفوں سے لکھا جائے گا۔ان کا مقالہ نعت ۱۹۹۰ء میں شائع ہوا جو ہم جیسے لوگوں کے لیے کسی نعمت سے کم نہیں۔ریاض مجید، صاحبِ طرز شاعر ہیں وہ پنجابی اور اردو شاعری میں ممتاز مقام رکھتے ہیں۔آپ کا شمار ممتاز نعت گویان میں ہوتا ہے۔ فروغِ حمد و نعت کے لیے ہمہ وقت کوشاں رہتے ہیںبالخصوص فیصل آباد شہر میں ان کا کام اور نام منفرد اہمیت رکھتا ہے۔ ڈاکٹر ریاض مجید کا مقالہ ’’ اُردو میں نعت گوئی‘‘ چھ ابواب پر مشتمل ہے۔
ابواب کی تقسیم:
پہلا باب نعت کا لغوی و اصطلاحی مفہوم اور موضوع و فن
دوسرا باب محرکات و ماخذات / عربی فارسی پس منظر
تیسرا باب اُردوئے قدیم کے نعتیہ نمونے اور جنوبی ہند میں نعت گوئی کا جائزہ
چوتھا باب شمالی ہند میں اُرو نعت گوئی کا جائزہ
پانچواں باب عصرِ جدید کی نعت گوئی
چھٹا باب عصرِ حاصر کی نعت گوئی
اس کے علاوہ ضمیمے میں مندرجہ ذیل عنوانات کے تحت مضامین شامل ہیں۔
ضمیمے:
۱۔ احادیث نبوی میں لفظ نعت کا استعمال… ۲۔ اسمائے رسولِ مقبولﷺ
۳۔ شرحِ بردہ………………… ۴۔ میلاد نامے
۵۔ غیر مسلم شعرا کا نعتیہ کلام………… ۶۔ خواتین کی نعت گوئی
۷۔ نعتیہ ریکارڈ اور فلمی طرزوں پر لکھی گئی نعتوں کا جائزہ
۷۱۸ صفحات پر مشتمل یادگار معلوماتی نعتیہ تذکرہ کو پروفیسر شہرت بخاری نے
اقبال اکادمی پاکستان لاہور کے تحت شائع کیا۔
ڈاکٹر ریاض مجید کا مذکورہ نعتیہ تذکرہ تاریخ اُردو نعت کا اہم گوشہ ہے۔
٭٭٭٭٭