توفیق دے کہ لکھوں میں ایسی تری ثناء جیسی لکھی نہ پہلے کبھی میں نے اے خدا

صالحہ کوثر

توفیق دے کہ لکھوں میں ایسی تری ثناء
جیسی لکھی نہ پہلے کبھی میں نے اے خدا

دنیا میں تیرے نام کو پھیلائوں چار سو
عقبیٰ میں اجر یہ ہو کہ ہوجائوں سرخرو

ہنگام نزع ہونٹوں پہ تیرا ہی نام ہو
اللہ! میری زیست کا یوں اختتام ہو

یارب! تری عطا سے نہ خالی یہ ہاتھ ہو
تیرے کرم کا دونوں جہانوں میں ساتھ ہو

وہ کامیاب زیست ہے جو لے خدا کا نام
ناکام ہے ملا نہ اگر خلد میں مقام

کوثر کی زندگی تری بخشش ہے اے خدا
یہ زندگی تباہ نہ ہو بس یہ ہے دعا