*ذوالفقار کی مدح میں*

*ذوالفقار کی مدح میں*

جب جُھکے۔۔ طاقِ حرَم ہے، جب اُٹھے ۔۔ شورِ اذاں

جب مِلے ۔۔ دستِ حسِیں ہے، جب کھنچے۔۔ روحِ رواں

جب چلے ۔۔ تیرِ نظر ہے، جب چُھبے۔۔ نَوکِ سناں

جب گرے۔۔ برقِ تپاں ہے، جب پھرے۔۔ چشمِ بتاں

بختِ حُر لڑنے میں ہے، اَڑنے میں عزرائیل ہے

جب مُڑے ۔۔ رحمت کا رخ ہے، جب اُڑے ۔۔ جبریل ہے

*(شاعرِ نسیم امروہوی)*