خالق ذو الجلال تو ہی معبود ہے

خالق ذو الجلال
تو ہی معبود ہے

میرا مسجود ہے
سب خلائق فنا

تو ہی موجود ہے
استعانت تری

ہے ضرورت مری
کر یہ چارہ گری

ہر غضب سے نکال
خالق ذوالجلال
از کراں تا کراں

تیرا جلوہ عیاں
تیری تخلیق ہیں

یہ زمیں آسماں
تو ہی خلاق ہے

رب آفاق ہے
سب کا رزاق ہے

تجھ سے سب کا سوال
خالق ذو الجلال
عام انسان کیا

سارا عالم ترا
تیرے محتاج ہیں

انبیاء اولیا
ارحم الرحمین

رب کل عالمین
تو یقین ہی یقیں

سارا عالم خیال
خالق ذوالجلال
مالک انس و جاں

نور تو بے گماں
روز و شب ہر قدم

تیری قدرت عیاں
عالم رنگ و بو

اللہ ہو اللہ ہو
جا بجا کو بہ کو

تو مکمل کمال
خالق ذوالجلال
عبد میں تو خدا

میں فنا تو تھا
عجز میری صفت

توانا ہی انا
تو ہے دانائے راز

سب کا ہے چارہ ساز
کر مجھے سرفراز

ذو المنن کر خیال
خالق ذوالجلال
ژ