مہک رہی ہے جہاںمیں کمال کی خوشبو

مہک رہی ہے جہاںمیں کمال کی
خوشبو
مرے حضور کے جاہ وجلال کی
خوشبو
گلاب حسن یقیں کے بکھیردیتی
ہے
رسول پاک سے شیریں مقال کی
خوشبو
ثناکی فکر گل اطوار لے کے
آئی ہے
شعوربخش ہے ان کے خیال کی
خوشبو
ہے عطر بارمنورکتابِ سیرت
میں
ورق ورق پہ نبی کے خصال کی
خوشبو
زالتفاتِ نبی بابِ لطف
کھلتاہے
مہکتی ہے جومرے انفعال کی
خوشبو
وہ جس پہ مشکِ معطر کورشک
ہوابرارؔ
عجب ہے گیسوئے روشن مثال کی
خوشبو
 
ابرارؔکرتپوری