وہ جس نے دی ہم کو زندگانی نہیں ہے کوئی بھی اس کا ثانی

محسن باعشن حسرت

وہ جس نے دی ہم کو زندگانی
نہیں ہے کوئی بھی اس کا ثانی
جو سب سے افضل ہے سب سے برتر
جو سب کا والی ہے سب کا یاور
وہ جس نے دونوں جہاں بنائے
زمین اور آسماں بنائے
وہ جس نے دولت ہمیں عطا کی
وہ جس نے شہر ت ہمیں عطا کی
وہ جس نے دی ہم سبھوں کو عزت
وہ جس نے بخشی ہمیں مسرت
وہ جس نے بخشی گلوں کو خوشبو
وہ جس نے دلکش بنائے جگنو
وہ جس نے تارے سجائے ہرسو
وہ جس نے غنچے کھلائے ہرسو
یہ چاند سورج دئے ہیں جس نے
پہاڑ پیدا کئے ہیں جس نے
جہاں پہ جس کی ہے حکمرانی
نہیں ہے کوئی بھی اس کا ثانی