چمک چاند سورج کو تونے عطا کی ستاروں نے تجھ سے ہی یہ نور پایا

تلوک چندمحروم

چمک چاند سورج کو تونے عطا کی
ستاروں نے تجھ سے ہی یہ نور پایا

ستاروں کو جگ مگ سر آسماں دی
تو پھولوں کو فرشِ زمیں پر کھلایا

رہا گرچہ آنکھوں سے پنہاں ہی پنہاں
نظر اپنی قدرت سے تو ہم کو آیا

تری یاد سے دل نہ غافل ہو میرا
دعا تجھ سے محروم کی ہے خدایا