ہے محو ثنا ذرہ ذرہ حق لاالہ الا اللہ غنچہ غنچہ خوشبوئے کرم

ہے محو ثنا ذرہ ذرہ

حق لاالہ الا اللہ
غنچہ غنچہ خوشبوئے کرم

انوار کی بارش ہے پیہم
پھولوں پہ ثنا ہے اس کی رقم

اس کی رحمت عالم عالم
روشن روشن اس کا جادہ

حق لاالہ الا اللہ
روز و شب ظلمت شام و سحر

اللہ کی قدرت کے مظہر
ہر منظر البیلا منظر

سورج، انجم، افلاک، قمر
ہر جلوۂ قدرت پاکیزہ

حق لاالہ الا اللہ
چشمے جھرنے میداں دریا

پر کیف ہوا رنگین فضا
بے تاب سمندر اور خلا

سردی، گرمی، شبنم، برکھا
موسم موسم نوریں جلوہ

حق لاالہ الا اللہ
میں کلمۂ طیب دل سے پڑھوں

ہو عظمت رب ایماں کا ستوں
طاعت ہو مرا انداز جنوں

ہر ایک عمل ہو روز فزوں
تعظیم کروں سجدہ سجدہ

حق لاالہ الا اللہ
میرا رب رزق دلاتا ہے

وہ سب کا مان بڑھاتا ہے
میں منگتا ہوں وہ داتا ہے

جاں لیتا اور جلاتا ہے
اس کا محتاج ہے ہر بندہ

حق لاالہ الا اللہ