یہ پیاری زمیں، وہ چرخ بریں، سبحان اللہ سبحان اللہ

امتیازالدین خاں

یہ پیاری زمیں، وہ چرخ بریں، سبحان اللہ سبحان اللہ
تو حسن کا خالق اور حسیں، سبحان اللہ سبحان اللہ

گلزار کی یہ زیب و زینت، سبحان اللہ سبحان اللہ
یہ آدم و حوا کی مورت، سبحان اللہ سبحان اللہ

یہ پھول سا تن، یہ پھول سا من، سبحان اللہ سبحان اللہ
ہر ایک کرن ہے شعلہ بدن، سبحان اللہ سبحان اللہ

یہ جگ مگ دن، جھل مل راتیں، سبحان اللہ سبحان اللہ
موسم کی بدلتی سوغاتیں، سبحان اللہ سبحان اللہ

یہ شام و سحر کے میخانے، سبحان اللہ سبحان اللہ
ہر دل کے چھلکتے پیمانے، سبحان اللہ سبحان اللہ

ہر ذرے میں جلوہ تیرا، سبحان اللہ سبحان اللہ
ہر ایک جگہ تیرا چرچا، سبحان اللہ سبحان اللہ

تو نور و نکہت، ناز و ادا، سبحان اللہ سبحان اللہ
سب کا داتا سب کا مولا، سبحان اللہ سبحان اللہ